Sunday, November 27, 2022
HomeHistoryبل گیٹس جو مائیکروسافٹ کا مالک اور دنیا کا امیر ترین شخص...

بل گیٹس جو مائیکروسافٹ کا مالک اور دنیا کا امیر ترین شخص ہے

بل گیٹس جو مائیکروسافٹ کا مالک اور دنیا کا امیر ترین شخص ہے یہ اصل میں کس تنظیم کا خطرناک مہرہ ہے۔ دنیا کے امیر ترین شخص بل گیٹس کو چند تنظیموں نے ہیرو بنانے اور انسانیت کی خدمت کا نام دے کر کافی مشہور کرنے کا کام کیا۔ اس نے افریقہ کا وزٹ کیا اور وہاں کے بچوں سے ملاقاتیں کیں اس کی کچھ تصاویر اور ویڈیوز کو یہودی میڈیا میں کافی ترقی ملی اس کے بعد کچھ کی ملاقات پاکستان اور انڈیا کے وزیراعظم ہاؤس میں ہوئی، اور کچھ باتیں منظر عام پر نہ آ سکیں،

ان ملاقاتوں سے پہلے اور بعد میں تینوں ممالک افریقہ، انڈیا اور پاکستان میں کچھ ایسے منصوبوں پر کام ہوا جو معمول سے ہٹ کر تھا۔ پاکستان، افریقہ اور انڈیا میں ویکسینیشن کو لازم قرار دیا، زبردستی حکومتوں کی زور سے پولیو اور دیگر ویکسینیشن کو پولیس کی نگرانی میں زبردستی لگائے جانے لگے جب کہ ویکسینیشن کے عمل میں حصہ لینے والے عملے کو پیسوں کے ساتھ ساتھ ویکسین بھی امریکہ نے خود فراہم کی یہ سوچ کر حیرت ہوتی ہے۔

افغانستان، عراق، فلسطین، شام اور کشمیر میں ہزاروں لوگوں اور ان کے بچوں کو قتل کرنے والا امریکہ کو اچانک ہمارا اور ہمارے بچوں کا خیال کیسے آگیا۔ اتنی محبت آخر کیسے آگئی۔ کیا مشینوں کی طرح انسان بھی ڈیجیٹل ہونے جا رہے ہیں۔ وبائی مرض کی آڑ میں ویکسینیشن کی آڑ میں کونسا زہر انسان کی رگوں میں اتارا جا رہا ہے۔ یقیناً ان سب کے پیچھے ان کا کوئی مقصد ہوگا۔ شیطانوں کے ہمدرد اور دوستوں کی اصلیت کے بارے میں بتاتا ہوں تاکہ آپ کو اندازہ ہو سکے کہ اندرونی سازشیں کس حد تک ہو رہی ہیں۔

Recommended

بل گیٹس دجالی ‏مہرہ مائیکروسافٹ کا مالک نظر آتا ہے۔ مائیکرو سافٹ وہ ادارہ ہے جو کمپیوٹر کے آپریٹنگ سسٹم ونڈوز اور اس سے متعلق سوفٹ ویئر بنانے کے لیے کام کرتا ہے اس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ ایک منٹ میں چار ہزار ڈالر کما لیتا ہے ہم جیسے نادان اس شخص کو بہت شریف آدمی سمجھتے ہیں۔ کیونکہ اس کو میڈیا پر ہمیشہ خیرات دینے اور لوگوں کی مدد کرنے والا شخص دکھایا جاتا ہے مگر آج یہ شخص کیسی ایجنڈا کے منصوبے پر کام کر رہا ہے، جس کے تحت پوری دنیا کی آبادی کو کم کرنے اور ان کے زیر استعمال اشیاء پر دجالی قوتوں کو کنٹرول کرنا چاہتے ہیں۔ غریب و غربت کے مارے لوگوں کو کم کرنا چاہتے ہیں۔ تاکہ حکومت کرنا آسان ہو جائے۔

اس مقصد کو پورا کرنے کے لیے ادویات سے لوگوں کو ٹھیک کرنے کے بہانے اور مزید بیماریوں میں مبتلا کرنا بچوں کو معذور بنانا مرد و زن میں پانچ بن کے عوض کو مصنوعی طریقے سے پیدا کرنا، زرعی کاموں، کھانے پینے کی اشیاء اور چھوٹے کاروباری لوگوں کو ختم کرکے بڑی ہائی پاور مارکیٹیں بنانا۔ ان کے گھروں کو ختم کرکے سہولیات کے نام پر فلیٹ میں رہنا، لوگوں کو مالک سے ملازم بنانا، لوگوں کو پیدل یا حکومتی ذرائع سے بس وغیرہ پر سفر کرنا اور لوگوں کے ہاتھوں سے کرنسی، معدنیات، دھاتیں ہر چیز کو لے کر الیکٹرونک کرنسی پر لگا دینے جیسے منصوبے شامل ہیں کرنسی ختم کر کے لوگوں کو سہولت کے نام پر الیکٹرونک ٹرانزیکشن۔ ڈیبٹ کارڈ، کریڈٹ کارڈ اور موبائل ایپلیکیشن سے ادائیگی جیسی سہولیات متعارف کروا دیی ہیں ان کے ہاتھ خالی کر دینے کا منصوبہ ہے۔

ان کا مقصد آبادی کو سات ملین سے تین بلین تک لانا ہے تاکہ ان پر آسانی سے حکومت کی جا سکے، اور ان کو دجالی لوگ کنٹرول کر سکیں۔ اور یہی دجالی لوگ اسی ایجنڈے پر کام کر رہے ہیں۔ یہ لوگ انرجی بنانے کے تمام منصوبوں کو ماحول سے کاربن ڈائی آکسائیڈ کم کرنے کا بہانا کر کے کنٹرول حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ سب سے زیادہ ویکسین کے ذریعے دنیا کی آبادی کو کم کیا سکے اور بچے کچھ لوگوں پر اپنے من پسند سے ان پر حکومت کی جا سکے۔ موجودہ حالات و واقعات کے پیش نظر حال ہی میں مل گئی جس نے میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہا ہے کہ لوگ موجودہ مہلک مرض کے بعد اور آنے والے مختلف امراض کے لیے تیار رہیں۔ جبکہ اس وقت پوری دنیا جس معاشی بحران کا شکار ہو چکی ہے ایسے وقت میں امید افزا بیان کی بجائے پریشانی اور ذہنی دباؤ کا شکار کرنے کے لیے دجالی میڈیا کا سہارا لیا جارہا ہے اور دوسری جانب بل گیٹس نامی شخص اپنے مکروہ عزائم ان کو عملی جامہ پہنانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہا۔

آپ کو یاد ہو گا ملالہ یوسف زئی اور پولیو مہم نے جو ماحول چند سال قبل بنایا تھا موجودہ صورتحال کی خرابی اسی جانب اشارہ کر رہی ہیں ملالہ اور اس کا گولی والا ڈرامہ، اسلام کے خلاف ویکسین لگانے والوں کو روکنے والے لوگوں کے خلاف بیان بازیاں اور پھر بل گیٹس نے ملالہ یوسف زئی کی ملاقات، میرا نہیں خیال کہ آپ کو اتنا سب بتانے کر بعد بھی نہیں سمجھتے ہوں گے جبکہ کی دانشور یہ بھی کہہ چکے ہیں کہ ملالہ یوسفزئی یہودیوں کے ایجنٹ ہیں اور یقیناً کسی نہ کسی وجہ کو سامنے رکھتے ہوئے اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ ایسے افراد کو مہرہ بنا کر اپنے مقاصد حاصل کرتے ہیں جنہیں عوام میں کافی ترقی حاصل ہو آج بھی انسانوں کی ایک بڑی جماعت ملالہ کی طرف دار دکھائی دیتی ہے لیکن ایک سوال یہ ہے کہ کبھی آپ نے ملالہ کے منہ سے پاکستان کی تعریف سنی۔ سوات میں ہونے والے حملے کے بعد ملالہ نے پاکستان کا رخ کرنے کی کوشش بھی نہیں کی، یورپ اور امریکہ کے بڑے بڑے فنکشن اڈینڈ کرتی ہے۔

Recommended

مگر انہوں نے کبھی پاکستان کی غریب عوام کے بارے میں نہیں سوچا جب کہ یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ ملالہ پر حملے سے قبل ہی وہ انٹرنیشنل نیوز چینل بی بی سی اور یہودی طبقے کے حوالے سے کافی کچھ تحریر کرتی آئی ہیں۔ جس سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ وہ ایک جاسوس اور ملک دشمن عناصر کی اجینڈ تھی۔ پیارے دوستو موجودہ حالات کے پیش نظر صورتحال کافی حد تک خراب ہو چکی ہے۔

اللہ رب العزت سے دعا ہے کہ وہ ہمیں ان جعلی فتنوں سے محفوظ فرمائے یہی وجہ تھی کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے علم حاصل کرنے پر زور دیا تھا تاکہ مسلمان یہودی چالوں کو پہچان سکیں۔ ان کی سازش سے بچا جا سکے۔ اللہ پاک تمام مسلمانوں کو ان کی سازشیوں سے بچائے آمین ثم آمین

Recommended
RELATED ARTICLES
Recommended

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

TopStory
TopStoryhttps://topstory.pk
Muhammad Fayyaz - Top Story. Dedicated To Providing The Best Of Story. Top Stories, News Update, Technology, Drama, Alparslan, Barbaros, Kurulus Osman, History, Life Style
Recommended

World News

Recommended

NEWS UPDATE

Recommended

Turkish Urdu Drama

Recommended